395

مولانا مودودیؒ کی کتاب ‘ تحریک اور کارکن’ کا انگریزی ترجمہ

محمد رضی الاسلام ندوی

‘تحریک اور کارکن’ مولانا سید ابو الاعلی مودودیؒ کی ان تقریروں اور تحریروں پر مشتمل ہے جو انھوں نے مختلف مواقع پر اور مختلف مراحل میں اسلامی تحریک کے کارکنوں کے سامنے پیش کی تھیں ۔

ان تقریروں اور تحریروں کے عربی ترجمہ کا مجموعہ ‘ تذکرہ دعاة الاسلام’ کے نام سے عالمِ عرب سے شائع ہوا تو اسے بہت مقبولیت حاصل ہوئی اور اس کے کئی ایڈیشن منظرِ عام پر آئے _ ترکی اور دیگر زبانوں میں بھی اس کے تراجم چھپے اور ہر جگہ اسلامی تحریکوں نے اسے اپنے تربیتی نصاب میں شامل کیا ۔ بعد میں ان تقریروں اور تحریروں کا مجموعہ اردو میں ‘ تحریک اور کارکن’ کے نام سے شائع کیا گیا _

یہ کتاب پانچ ابواب پر مشتمل ہے :

(۱) دعوت اسلامی کی فکری بنیادیں : اس میں دعوتِ اسلامی کی اساسات ، اس کے بنیادی نکات اور جماعت اسلامی کے مقصد اور مسلک پر سیر حاصل بحث کی گئی ہے ۔
(۲) دعوت اسلامی کی اخلاقی بنیادیں : اس میں بنیادی انسانی اخلاقیات ، ان کے اور امامت کے باب میں اللہ کی سنت پر سیر حاصل بحث کی گئی ہے ۔
(۳) عملی خاکہ : اس میں تحریک اسلامی کے طریقۂ کار ، اس کی حکمتوں اور فوائد ، اس کے طریقۂ تربیت اور لائحہ عمل کے تحت رہ نمائی کی گئی ہے ۔
(۴) تحریک اسلامی کے علم برداروں کی لازمی خصوصیات : اس کے تحت صالح گروہ کے لیے کم ازکم ضروری صفات ، تحریک اسلامی سے وابستگی کا معیار ، کارکنوں کا اصل سرمایہ اور راہ حق کے لیے ضروری توشہ کے عنوانات کے تحت اظہارِ خیال کیا گیا ہے _
(۵) اسلامی انقلاب کے لیے مطلوبہ اوصاف : اس میں کارکنانِ تحریک کے انفرادی اوصاف ، اجتماعی اوصاف ، تکمیلی اوصاف ، وہ عیوب جو ہر بھلائی کی بیخ کنی کردیتے ہیں اور وہ نقائص جن کی تاثیر کام کو بگاڑ دیتی ہے ، ان پر سیر حاصل بحث کی گئی ہے ۔

اس طرح یہ کتاب فکری ، علمی اور عملی تینوں پہلوﺅں کا احاطہ کرتی ہے ۔ ساتھ ہی انفرادی اور اجتماعی معاملات میں بہترین گائیڈ بک کا کام دیتی ہے ۔

مقامِ مسرّت ہے کہ حال میں اس کتاب کا انگریزی ترجمہ مرکزی مکتبہ اسلامی پبلشرز نئی دہلی سے شائع ہوا ہے _ اس میں مولانا کی جو تقریریں اور تحریریں شامل ہیں ان میں سے بیش تر کا انگریزی ترجمہ الگ الگ کتابچوں کی شکل میں پہلے بھی شائع ہوتا رہا ہے _ جناب ارشد شیخ ، اسسٹنٹ سکریٹری شعبۂ میڈیا، جماعت اسلامی ہند نے انھیں مرتب کرکے ان پر نظر ثانی کی ہے _

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں