75

شعبہ اردو، چودھری چرن سنگھ یو نیورسٹی، میرٹھ کا 17وا ں یوم تاسیس 12/ ستمبر کو

ڈاکٹر منظر کاظمی نیشنل ایوارڈ پروفیسر ارتضیٰ کریم کو(برائے فکشن تنقید)اور محترم دیپک بدکی کو(برائے اردو فکشن)
میرٹھ:شعبہ اردو چودھری چرن سنگھ یونیورسٹی، میرٹھ اپنا 17وا ں یوم تاسیس منانے جارہا ہے۔ 2002ء سے اب تک شعبہء اردو نے میرٹھ ہی نہیں بلکہ پورے ملک ہندوستان میں اردو کے فروغ کے لیے خوب سے خوب تر کوششیں کی ہیں۔شعبہء میں ایم۔اے اردو،ایم۔اے ماس میڈیا، ایم فل، پی ایچ ڈی اور ڈپلومہ اردوجیسے کورسز شروع کیے ہیں۔ اردو کو روزگار سے جوڑنے کے لیے شعبہء کی کوششیں قابلِ تعریف ہیں۔درس وتدریس کے ساتھ ساتھ ٹریننگ کا بھی اچھا انتظام کیا،اور اس کا اچھا رزلٹ برآمد ہوا۔اس کے ساتھ ساتھ ٹیچنگ میں بھی شعبہء اردو کے طلبا ء نے کامیابی حاصل کی۔اپنی کوششوں سے شعبہء اردو نے بین القوامی سطح پر پہچان بنائی ہے۔
17/ سالہ جشن کے موقع پرمندرجہ ذیل پروگرم منعقد کیے جائے گے۔
(1)اس سال منظر کاظمی نیشنل ایوارڈ فکشن تنقید کے لیے ہندوستان کے ممتاز ناقد پروفیسر ارتضیٰ کریم(ڈین،فیکلٹی آف آرٹس، دہلی یونیورسٹی،دہلی)کو اور اردو فکشن کے لیے مشہور فکشن نگار محترم دیپک بدکی (کشمیر) کوپیش کیا جائے گا۔
(2) ایم۔اے اور ایم فل کے ٹاپرس طلبہ کے ساتھ ساتھ ان اساتذہ کو بھی اعزاز سے نوازا جائے گا جن کی 2018ء اور 2019ء میں کتابیں شائع ہوئی ہیں۔
(3) شعبہء اردو میں پڑھنے والے وہ طالبِ علم جنہوں نے نیٹ کے امتحان میں کامیابی حاصل کی یا سرکاری ملازم ہوئے، ان کو بھی اعزاز سے نوازا جائے گا۔
(4) محفلِ افسانہ کا بھی انعقاد کیا جائے گا، جس میں محترم دیپک بدکی، محترم خورشید حیات اور پروفیسر اسلم جمشیدپوری اپنے اپنے افسانوں کی قرأت کریں گے۔
پروگرام کی پہلی نشست میں چودھری چرن سنگھ یونیوسٹی کے شیخ الجامعہ پروفیسر این کے تنیجاشمع روشن کریں گے۔مہمانِ خصوصی کے طور پر نائب شیخ الجامعہ پروفیسر وائی وملا تشریف لائینگی جب کہ پروگرام کی صدارت پروفیسر اسلم جمشید پوری فرمائینگے۔ڈاکٹر معراج الدین احمد اور حاجی عمران صدیقی بطور مہمانانِ اعزازی شریک ہونگے۔
محفلِ افسانہ کی مجلسِ صدارت میں پروفیسر ارتضیٰ کریم، ڈاکٹر ذکی طارق اور محترم عمران صدیقی جلوہ افروز ہونگے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں