94

شعبۂ اردو جامعہ ملیہ اسلامیہ کی طلبہ تنظیم بزمِ جامعہ کا انتخابی عمل مکمل


نئی دہلی(پریس ریلیز) شعبہئ اردو جامعہ ملیہ اسلامیہ نئی دہلی کے طلبہ و طالبات کی دیرینہ ادبی و ثقافتی تنظیم بزم جامعہ(2019-20)کی تشکیل نو عمل میں آئی۔ نو منتخب عہد ہ داران اور اراکین کو مبارک باد پیش کرتے ہوئے صدر شعبہ اور بزم جامعہ کے صدر پروفیسر شہزاد انجم نے کہا کہ ماضی میں اس تنظیم سے شعبہ کے وہ قابل فخر طلبہ وابستہ رہے جو آج ادبی دنیا میں اپنی شناخت قائم کرچکے ہیں۔ انھوں نے کہا کہ یہ تنظیم طلبہ و طلبات کی تنظیمی، ادبی اور تخلیقی صلاحیتوں کو فروغ دینے کا ایک اہم ذریعہ ہے۔ بزم جامعہ کے ایڈوائزرڈاکٹر خالد مبشر نے کہا کہ بزم جامعہ کا امتیاز اور اس کی انفرادیت یہ ہے کہ یہ مکمل طور پر طلبہ کی تنظیم ہے، طلبہ کے لیے ہے اور طلبہ کے ذریعے قائم کی گئی ہے۔ اس کا مقصد طلبہ کے مخفی جوہر کو نکھار نا اور ان کا شخصی ارتقا ہے۔ نئے تعلیمی سال میں بزم جامعہ کی تشکیل نو اس طرح عمل میں آئی ہے کہ صدر شعبہ نے ڈاکٹر خالد مبشر کو بزم جامعہ کا ایڈوائزر اور ڈاکٹر سرور الہدیٰ، ڈاکٹر مشیر احمد،ڈاکٹر سید تنویر حسین، ڈاکٹر عادل حیات، ڈاکٹر سمیع احمد، ڈاکٹر سلطانہ واحدی اور ڈاکٹر محمد مقیم کو بزم جامعہ کا نامزدکیا ہے۔بزم جامعہ کے عہدہ داران اور اراکین کا انتخاب جامعہ ملیہ اسلامیہ کے سبجیکٹ ایسوسی ایشن کے ضابطہئ اخلاق کے مطابق عمل لایاجاتا ہے۔ جس کے تحت ایم۔ اے (سال آخر)سے نائب صدر ایم۔ اے (سال اول) سے جنرل سکریٹری،بی،اے(سال آخر) سے جوائنٹ سکریٹری اور خازن کے علاوہ ہر کلاس سے دو دو طلبہ وطلبات کو ’بزم جامعہ‘کا رکن منتخب کیا جاتا ہے۔نئے تعلیمی سال میں آفرین طارق کو نائب صدر، نیر اعظم کو جنرل سکریٹری، محمد دانش کو جوائنٹ سکریٹری، رضوانہ خاتون کو خازن، غلام علی اخضر اور ابوالاشبال کو میڈیا کوآرڈ نیٹرمنتخب کیا گیا ہے۔ جب کہ عبدالرؤف، تسنیم سراج الحق، مہرالنساء، ناصر حسین، امداد اللہ، تبسم خاتون، عامر اسلم، ردا علوی، جمیل طارق، نازنین عین اللہ اور اعجاز اختر کو رکن منتخب کیا گیا ہے۔ بزم جامعہ کے تحت طلبہ کے لیے استقبالیہ تقریب، الوداعیہ تقریب اور انٹر یونی ورسٹی ادبی و ثقافتی مقابلوں کا انعقاد کیا جاتا ہے۔

اس خبر پر اپنی رائے کا اظہار کریں

اپنا تبصرہ بھیجیں